شربت دینار

0
120

شربتِ دینار بنانے کا طریقہ

وجہ تسمیہ

۱۔ تخم کشوث کو دینار کہنے کی وجہ یہ ہے کہ دینار اکثر کیسہ (تھیلی) میں رکھا جاتا ہے اور تخم کشوث کو جوشاندہ اور دوسرے مشروبات میں در صُرّہ بستہ (پوٹلی میں باندھ کر) استعمال کرنے کی شرط ہے ، اِسی لئے فارسی میں تخم کشوث کو تخم کیسہ بھی کہتے ہیں۔
۲۔ اِس شربت کا رنگ دینار کے رنگ جیسا ہوتا ہے اس لئے اِس کو شربتِ دینار کہتے ہیں۔
۳۔ عباسی عہد کا مشہور طبیب بختیشوع جو اِس شربت کا مؤجد ہے، وہ اِس کی ایک خاص مقدار ایک دینار میں فروخت کرتا تھا اِس لئے یہ شربت دینار کے نام سے مشہور ہوا۔
افعال و خواص اور محل استعمال
امراض جگر اور تلینِ شکم کے لئے مخصوص ہے۔ معدہ ، جگر ، رحم اور مثانہ کی خرابی، استسقائ، ذات الجنب اور موسمی بخاروں میں مفید ہے۔

جزءِ خاص

تخم کشوث

دیگر اجزاء ا مع طریقۂ تیاری

پوست بیخ کاسنی ۱۰۰ گرام، تخم کاسنی، گُلِ سُرخ ہر ایک ۵۰ گرام گل نیلو فر،گلِ گاؤ زباں ہر ایک ۲۵ گرام، تخم کشوث ۸۰ گرام (در صرّہ بستہ)۔
جملہ ادویہ کو پانی میں جوش دے کر چھان کر قند سفید ایک کلو شامل کر کے قوام بنائیں اور ریوند چینی ۴۰ گرام سفوف کر کے داخل قوام کریں۔

مقدار خوراک

۲۵ تا ۵۰ ملی لیٹر۔


شربت دینار دوسرا نسخہ

” شربت دینار “

افعال و خواص

شربت دینار امراض جگر اور معدہ کے لئے مخصوص ہے۔ معدہ ، جگر ، رحم اور مثانہ کے درد، استسقاء, ذات الجنب اور موسمی بخاروں میں مفید ہے۔
جگر کی سوزش اور ورم کو دور کرتا ہے۔
یرقان میں اس کا استعمال نہایت مفید ہے۔
جگر کی خرابی کی وجہ سے جسم پر ورم۔
معدے کا ورم۔
پاخانہ صاف لاتا ہے۔
درد شکم
جگر کے سدے کھولنے، قبض کو توڑنے رحم اور مثانہ کے ورم کو تحلیل کرتا ہے ۔ ان اورام سے پیدا شدہ عضوی درد کو تسکین دیتا اور متعلقہ اعضاء کے افعال کی اصلاح اور کمزوری کو دور کرتا ہے ۔ پیٹ اور پہلو کے درد ( ذات الجنب) کو زائل کرتا ہے۔ استسقاء کے لئے مفید ہے اور معمولی قبض میں نفع بخش ہے۔ ۔
شربت دینار

اجزاءِ خاص معہ طریقۂ تیاری

پوست بیخ کاسنی 100 گرام، تخم کاسنی، گُلِ سُرخ ہر ایک 50 گرام ، گل نیلوفر، گلِ گاؤزباں ہر ایک 25 گرام، تخم کثوث 80 گرام (در پوٹلی یا تھیلی میں باندھ کر استعمال کرنے ہیں)۔ ریوندچینی 40 گرام، مکو سالم پودا 100 گرام۔

بنانے کا طریقہ

جملہ ادویہ بمعہ تھیلی بند تخم کثوث کو 2 لیٹر پانی میں رات بھر بھگو دیں اور صبح جوش دے کر چھان لیں اور چینی ایک کلو شامل کر کے قوام بنائیں,
شربت تیار ہونے کے بعد ریوندچینی 40 گرام باریک سفوف کر کے داخل قوام کریں۔

مقدار خوراک

2 سے 3 کھانے کے چمچ آدھا گلاس پانی یا آدھا کپ عرق سونف میں استعمال کریں
ریفرنس بیاض کبیر دہلی کے مرکبات
حکیم مظہر حسین جنجوعہ

Leave a Reply