اسگند ناگوری

0
1800

اسگند ناگوری

اسگندکو انگریزی میں: Winter Cherry کہتے ہیں جبکہ اسگند کا نباتاتی نام: Withania somnifera ہے۔ اور اس کی فیملی: Sofanaceae ہے۔
اسگند ناگوری کو پنجابی میں آکسن، بوگنی بوٹی، جبکہ سندھی میں بھڈ گند، اور ہندی: اسگند، سنسکرت: اشوگندھا، عربی: عبعب منوم
فارسی: کاکج ہندی،
اسگند ناگوری بچوں سے لیکر بوڑھوں تک ، عورتوں اور مردوں دونوں کے لئے یکساں مفید ہے۔یہ مضر اثرات سے پاک ایسی بوٹی جس کے افعال و اثرات صدیوں سے ثابت ہیں۔ جدید تحقیقات سے اس کے نئے خواص بھی دریافت ہوئے ہیں۔ یہ بوٹی اپنے افعال و اثرات میں جنسنگ کے ہم پلہ ہے۔

Withania somnifera اسگندناگوری 1
ماہیت:

اسگند ناگوری بنیادی طور پر یہ خودرو پودا ہے۔ اس کا پودا تقریبا ڈیڑھ میٹر تک بلند ہوتا ہے ۔شاخیں باریک ہوتی ہیں اورپتے ، بیضوی ، موٹے اور ان کی رگیں شفاف ہوتی ہیں۔ 5 سے 10 سنٹی میٹر لمبے، 2.5 سے 5 سینٹی میٹر چوڑے اور پھول سبزی مائل یا ہلکے زرد رنگ کے اورگھنٹی کی شکل کے ہوتے ہیں۔ اس کا پھل چھوٹا اور نارنجی سرخ رنگ کا ہوتا ہے۔اسے پنیر کی تیاری میں استعمال کیا جا سکتا ہے۔ طب میں عام طور پراس کی جڑیں بطور دوا استعمال ہوتی ہیں اور یہی جڑیں اسگندکے نام سے بازار میں دستیاب ہوتی ہیں۔

solanum Withania somnifera اسگند ناگوری 2

مقام پیدائش:

باغوں، کھیتوں، جنگلوں اور سڑکوں کے کنارے اور خالی جگہوں میں خودرو پیدا ہوتا ہے۔ یہ برصغیر کے خشک اور معتدل علاقوں میں عام پایا جاتا ہے۔ پاکستان اور مغربی ہند کے تمام علاقوں میں عام ملتا ہے لیکن آسام اور بنگال میں نہیں پایا جاتا۔ بہت سے علاقوں مثلا پنجاب، سندھ، راجھستان، کیرالہ اور گجرات میں اسے کاشت بھی کیا جاتا ہے۔ سب سے زیادہ اورعمدہ اسگند ناگور میں پیدا ہوتی ہے۔ ناگور کی اسگند طبی طور پرمعیاری بھی سمجھی جاتی ہے اور اسگند ناگوری کے نام سے معروف ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ٹونگٹ علی کیا ہے؟ طبی فوائد

رنگ:

جڑ بھوری۔ ذائقہ: قدرے تلخ، مزاج: گرم خشک درجہ سوم۔ مصلح: گوند کتیرا۔ بدل: بہمن سفید۔ مقدار خوراک: 1 سے 6 ماشہ

Withania somnifera اسگند ناگوری 1 3
اسگند کے فوائد:

اسگند کے استعمال سے خون کے سرخ اور سفید ذرات کی پیدائش بڑھ جاتی ہے اس لئے اسگند خون کی کمی (انیمیا) کے لئے بہت فائدہ مند ہے۔جسمانی کمزوری اس کے استعمال سے دور ہو جاتی ہے اور عام صحت بہتر ہو جاتی ہے اور وزن میں اضافہ ہوتا ہے۔ اس کی یہ حیثیت اور اہمیت بالکل ایسے ہی ہے جیسے چین میں جنسنگ کی ہے۔
ویدک میں اسے رسائن(ایسی دوا جو بڑھتی عمر کے اثرات کو زائل کرکے جوانی کی طرف لوٹائے) کہا جاتا ہے اس لئے اعادہ شباب کے لئے استعمال ہونے والی ادویات میں اسے ممتاز حیثیت اور خاص اہمیت حاصل ہے ۔اس کو باقاعدہ استعمال کرنے والے مندرجہ ذیل فائدے حاصل کر سکتے ہیں۔

• بڑھاپے کی علامات دیر سے شروع ہوتی ہیں ۔
• .اس کے استعمال سے جسمانی کمزوری دور ہوتی ہے
• تھکاوٹ کا خاتمہ ہوتا ہے ۔
• خون اور دوسرے اہم سیالات بد ن کی پیدائش بڑھ جاتی ہے۔
• قوت مدافعت بڑھتی ہے۔
• قوت باہ میں اضافہ ہوتاہے ۔
• مادہ منویہ کی پیدائش اور سپرم کی تعداد اور صحت میں اضافہ ہوتاہے۔
• عورتوں اور مردوں میں اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت میں بہتری آتی ہے ۔
• حاملہ خواتین کی صحت بہترہوتی ہے ۔
• اداسی ، خوف ، تشویش ، ڈیپریشن ، ٹینشن، جو بڑھاپا آنے کا اہم سبب ہیں ، کا خاتمہ ہوتا ہے۔
• نظام ہضم کی اصلاح ہوتی ہے۔
• جگر کا فعل درست ہوتا ہے۔
• کھایا پیا جزو بدن بنتا ہے ۔
• بالوں کی سیاہی واپس آنا شروع ہوجاتی ہے۔
• ہڈیاں اور عضلات قوت پکڑتے ہیں۔
• ہلتے دانت مضبوط ہوتے ہیں۔
• لاغری (دبلاپن) دور ہوکر وزن بڑھتا ہے۔
• جھریو ں کا خاتمہ ہوتا ہے۔
• اعصاب کو تقویت ملتی ہے۔
• یاداشت بہتر ہو جاتی ہے ۔
• دماغی کام کرنے کی صلاحیت بڑھتی ہے۔ غرض کہ ڈھلتا شباب واپس لوٹ آتا ہے ۔
اسگند کی جڑ اور اس کا سفوف

حب اسگند:

جوڑوں اور پُشت کے درد میں نیز بلغمی اور ریاحی اِمراض میں نافع ہے۔
حب اسگند
موصلی سفید 14 گرام
اجوائن دیسی 14 گرام
فلفل دراز 14 گرام
پیپلا مول 14 گرام
ستاور 16 گرام
سونٹھ 16 گرام
بدھارا 16 گرام
اسگند ناگوری 16 گرام
ترکیب تیاری اور طریقہ استعمال: سب اشیاء کو صاف کرنے کے بعد باریک پیس لیں اور قدرے شہد مِلا کر بیر کے برابر گولیاں تیار کر لیں۔ رات کو سوتے وقت دو گولیاں ایک کپ نیم گرم پانی یا پھر عرق بادیان کے ساتھ استعمال کرائیں۔

یہ بھی پڑھیں: ستاور کے فوائد

سفوف فربہ بدن:

وہ افراد جو دبلے پتلے ہوں جسمانی طور پر کمزور ہوں اور اپنا وزن بڑھانا چاہتے ہیں تو یہ نسخہ ان کے لئے بہت مفید ہے۔
سفوف فربہ بدن
اسگند ناگوری 100 گرام
سونٹھ 50 گرام
گل بابونہ 50 گرام
اناردانہ 50 گرام
طباشیر 50 گرام
مغز بھنگ 50 گرام
چھلکا اسبغول 50 گرام
الائچی خورد 25 گرام
کشتہ فولاد 10 گرام
مصری 200 گرام
ترکیب تیاری اور طریقہ استعمال: کشتہ فولاد اور چھلکا اسبغول کے علاوہ تمام اجزاء کو کوٹ چھان کر بعد میں کشتہ اور چھلکا شامل کر کے اچھی طرح مکس کر لیں۔ ایک چمچ چائے والا صبح و شام ہمراہ نیم گرم دودھ کے ساتھ کھانے کے دو گھنٹہ بعد استعمال کریں۔
اسگند ناگوری کا مفرد استعمال قوت باہ کیلئے:
اسگند ناگوری 8 ماشہ لیں، آدھ کلو دودھ میں خوب ابالیں جب دودھ ڈیڑھ پاؤ رہ جائے مصری ملا کر پی لیں۔ شوگر کے مریض مصری کے بغیر پئیں ۔دنوں میں چہرہ سرخ کردیتا ہے، عام صحت بہتر ہوجاتی ہے اور قوت باہ اس قدر کہ طبیعت پر قابو پانا مشکل ہوجاتا ہے۔ صبح کے وقت پئیں اور ڈیڑھ ماہ تک استعمال کریں۔
اسگند ناگوری سے ڈپریشن کا علاج:
تحقیق سے یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ اسگند ناگوری کا استعمال ڈپریشن اور انزائیٹی میں بہت مفید ہے۔

ڈپریشن کے لئے
اسگند ناگوری 30 گرام
جنسنگ کورین 30 گرام
ترکیب تیاری اور طریقہ استعمال: اسگند ناگوری اور جنسنگ دونوں جڑی بوٹیوں کا سفوف بنائیں اور 500ملی گرام کے کیپسول بھر لیں دو کیپسول صبح و شام استعمال کریں۔یہ ڈپریشن کا بہترین علاج ہے۔

اسگند کا بہترین نسخہ:

اسگند کا یہ نسخہ بہترین رزلٹ دینے والا نسخہ ہے کم اجزاء اور بنانے میں بھی بہت آسان ہے۔ اس کے مسلسل استعمال سے بے پناہ قوت شہوانی پیدا ہوتی ہےاگر جماع سے پرہیز کیا جائے تو چہرے کی جھریاں اور بال سفید ہونا دور ہو جاتے ہیں۔ جوانوں کو قبل ازوقت بوڑھا ہونے سے بچاتی ہے۔
اسگندکا بہترین نسخہ
اسگند ناگوری 50 گرام
بیخ بدھارا 50 گرام
ستاور 50 گرام
مصری 150 گرام
ترکیب تیاری اور طریقہ استعمال: تمام اجزاء کو علیحدہ علیحدہ کوٹ لیں اور بعد میں مصری شامل کر کے شیشی میں محفوظ کر لیں۔ بڑوں کے لئے مقدار خوراک 6 گرام اور بچوں کے لئے 1 سے 3 گرام دودھ کے ساتھ رات کے کھانے کے دو گھنٹے بعد استعمال کرائیں۔
اسگند ناگوری سے احتلام اور جریان کا علاج:
اگر آپ کثرت احتلام اور جریان میں مبتلا ہیں تو یہ نسخہ ایک بار ضرور استعمال کریں۔ کثرت احتلام اور جریان منی کے ساتھ یہ مادہ منویہ کے پتلے پن کو دور کر کے اس کی مقدار بھی بڑھاتا ہے۔اسگند ناگوری کے استعمال سے یقیننا آپ کی بے رونق زندگی میں رونق آجائے گی۔

احتلام اور جریان کے لئے

اسگند ناگوری 40 گرام
ستاور 40 گرام
ثلعب مصری 40 گرام
ترکیب تیاری اور طریقہ استعمال: تمام اجزاء کو کوٹ چھان کر سفوف تیار کر لیں اور محفوظ کر لیں۔
مقدار خوراک: 3 گرام صبح و شام خالی پیٹ ہمراہ نیم گرم دودھ استعمال کرائیں۔

جوڑوں ، گھٹنوں ، مہروں اور درد کمر کے لئے:

بوڑھے حضرات کے لئے بہت بہترین چیز ہے عمر بڑھنے کی وجہ سے درد ہو یاجوڑوں میں خشکی ہوتو یہ نسخہ بہترین ہے اسے مستقل تین ماہ تک استعمال کریں انشاء اللہ بالکل تندرست ہو جائیں گے۔
جوڑوں، گھٹنوں، مہروں اور درد کمر کے لئے
اسگند ناگوری 100 گرام
گوند کیکر 100 گرام
گوند کتیرا 100 گرام
ترکیب تیاری اور طریقہ استعمال: تمام اجزاء کا سفوف کر لیں اور محفوظ کر لیں، روزانہ ایک چمچ صبح و شام دودھ کے ساتھ لیں ۔ دودھ نہ ملے تو پانی کے ساتھ لیں ۔ کسی دافع درد روغن مثلا روغن مالکنگنی یا روغن اوجاع کی دن میں ایک مرتبہ مالش بھی کریں۔
نوٹ: کوئی بھی نسخہ استعمال کرنے سے پہلے اپنے معالج، طبیب سے ضرور مشورہ کر لیں

جوڑوں کا درد Arthritis 4

Leave a Reply