پلازماکیاہے

0
507

آج میں #پلازما_تھراپی کے بارے میں کچھ معلومات کا اشتراک کرنا چاہتا ہوں۔
میں اس پر تین حصوں میں بات کروں گا۔
1 • پلازما تھراپی کیا ہے اور یہ کیسے کام کرتا ہے….؟
2 • ہم Covid-19 مریض کے علاج کے لئے پلازما تھراپی کا استعمال کیوں کریں؟
3 • کیا میرے لیے نقصان دہ ہے پلازما عطیہ کرنا؟

.کون دے سکتا ہے پلازما اور کون نہیں دے سکتا؟

پلازماکیاہے

پلازما خون کا ایک ‘پیلا مائع’ جزو ہے۔ اس پلازما میں، ہمارا مدافعتی نظام بہت سے اینٹی باڈیز تیار کرتا ہے جو ہمارے جسم کو محفوظ رکھنے کے لئے ایک فوجی کی حیثیت سے گھومتا ہے۔ COVID-19 سے صحت یاب ہونے کے بعد ہمارا مدافعتی نظام اس وائرس کو تسلیم کرتا ہے اور ایک ایسی ٹارگٹڈ اینٹی باڈی تیار کرتا ہے جو اس وائرس کو ہمارے جسم پر حملہ کرنے سے نیوٹرلائز کرتا ہے۔ وہ سیل کے اندر رسائی حاصل نہیں کر سکتا ۔ اس کے بعد ان اینٹی باڈیز کو مریض کے پاس منتقل کیا جاتا ہے اور یہ ان کو بہت جلد صحت یاب ہونے میں مدد دیتی ہے۔

#پلازما_تھراپی:
پلازما انفیوژن کو بھی غیر فعال امیونائزیشن کہا جاتا ہے یہ ایک ایسا عمل ہے جس کے تحت COVID-19 کے برآمد ہونے والے علامتی مریض سے جراثیم کش اینٹی باڈیز کو متاثرہ مریض میں منتقل کیا جاتا ہے۔ اس وائرس کے خلاف لڑنے کے لئے متاثرہ مریض کے مدافعتی نظام کو چالو کرنے کے لئے ہے۔
#کونلوگپلازماعطیہکرسکتےہیں:
1• وہ لوگ جو کورونا مرض سے صحت یاب ہو چکے ہیں.
2 • وہ لوگ جن پر صحت یاب ہونے کے بعد 15 دن گزر گئے ہیں۔
3 • جن کا آئی جی جی ٹیسٹ (IgG antibody )مثبت ہے (ہسپتال آپ کے لئے کرتا ہے)۔ چونکہ بہت سے مریض قاتل اَینٹی باڈیز بالکل تیار نہیں کر سکتا۔
IgG Antibodies leve
سے مریض کے قوت مدافعت کا پتہ چلتا ہے۔

4 • جن کا Antigen Level زیرو یا کم سے کم ہو کیونکہ یہ علامات کو بڑھا سکتے ہیں۔
5 •جن کا عمر: 18-55 سال ہو ۔
6•جن کا وزن 50 کلو گرام اور level HB اس سے اوپر ہو۔ >12.5(خواتین)
اور >13 (مرد)
7 • جس نے پچھلے 1 -2 ہفتے سے Steriods کی دوائیں استعمال نہیں کی ہیں۔
#کونلوگپلازماعطیہنہیںکرسکتے۔۔۔۔۔

1: پہلے سے موجود بیماریوں میں مبتلا افراد.
2: 55 سال سے زائد عمر کے طریقہ کار سے زائد افراد.

• اس پورے عمل میں 1-2 گھنٹے لگتے ہیں۔

#طریقہ_کار۔۔۔۔۔

1. سب سے پہلے IV LINE/ Cannula کے ذریعے ڈونر سے خون لیا جاتا ہے۔
2 • پھر ایک سینٹرفیوج مشین میں عملدرآمد کیا جاتا ہے۔
3•پھر خون سے مطلوبہ خلیے لیے جاتے ہیں۔
4 • آخر میں باقی خون جسم میں واپس آ جاتا ہے.

#کتنیبارپلازماعطیہکیاجاسکتاہےاورکتنیزندگیوںکوبچایاجاسکتا_ہے؟

عموماٙٙ 12 ہفتوں کی بیماری کے بعد پلازما عطیہ کیا جانا چاہئے. لیکن ہمارے سیٹ اپ میں ہم صحتیاب شدہ مریضوں سے محروم ہیں لہذا ہم پہلے بھی لے سکتے ہیں۔

• پلازما خون میں سے زیادہ کثرت سے عطیہ کیا جا سکتا ہے. ہمارے سیٹ اپ میں ہر 2 ہفتوں اور 2 بار/ہفتہ کے بعد •

#ایکپلازماعطیہ کے ذریعہ دو متاثرہ مریضوں کو بچایا جاسکتا ہے!
ایک جان بچانے کے لئے تقریبا 200 ملی میٹر پلازما خوراک مؤثر ہے.
• پلازمہ عطیہ کر سے پہلے درجہ زیل Test کرنے ہوتے ہیں۔
(ایل ایف ٹی ایس، آر ایف ٹی ایس، سی بی سی، سیرم الیکٹرولائٹس، البیومین، ہیپاٹائٹس اسکریننگ، جنسی طور پر منتقل ہونے والے انفیکشن اسکریننگ وغیرہ) ۔

#کیاپلازماعطیہ کرنانقصاندہ ہے۔۔۔۔۔۔۔۔؟؟؟:
نہیں، ایسا نہیں ہے۔
پلازما عطیہ کرنے کے بعد ایک کافی اچھی مقدار میں پانی پینا چاہئے، پروٹین اور صحت مند کھانا کھائیں۔ کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ اگر وہ پلازما کا عطیہ دیتا ہے تو وہ دوبارہ کووڈ 19 سے متاثر ہوسکتا ہے کیونکہ اینٹی باڈیز کی کمی ہوگی۔ یہ غلط ہے۔یہ ایک غلط تصور ہے۔ ہمارا مدافعتی نظام خود بخود اینٹی باڈیز کی کمی کو بھر دیتا ہے کیونکہ ہم پروٹین کھاتے ہیں کیونکہ اینٹی باڈی صرف پروٹین کا ایک مرکب ہے۔
لہذا ہم سب کو قوم کو بچانے کے لئے پلازما عطیہ کرنے کے لئے ایک قدم سامنے آنا چاہئے.

آگاہی ک کے لئے حصہ داری کریں اور آگے شیر کرہں۔
شکریہ۔۔

Leave a Reply